ترجمان دفتر خارجہ ممتاز زہرہ بلوچ نے کہا ہے کہ وزیر اعظم آفس تحریک انصاف کی جانب سے انٹرنیشنل مانیٹری فنڈ کو لکھے گئے خط کے معاملے کو دیکھ رہا ہے۔

جمعہ کو ہفتہ وار بریفنگ دیتے ہوئے انہوں نے کہا کہ ہیومن رائٹس کونسل کے 55ویں اجلاس کے موقع پر سیکریٹری خارجہ سائرہ سجاد قاضی نے سیکرٹری خارجہ نے عالمی انسانی حقوق کے فروغ کے لیے پاکستان کی بھرپور حمایت کا اعادہ کیا اور ملکی اور بین الاقوامی سطح پر تمام انسانی حقوق کے تحفظ پر زور دیتے ہوئے اقوام متحدہ کے انسانی حقوق کے طریقہ کار کے ساتھ تعاون کو بڑھانے کا بھی عہد کیا۔

ان کا کہنا تھا کہ سیکریٹری خارجہ نے ہائی کمشنر آفس پر زور دیا کہ وہ بھارت کے غیرقانونی زیر قبضہ جموں و کشمیر میں صورتحال کی نگرانی کریں تاکہ وہاں انسانی حقوق کی صورتحال کے حوالے سے انکوائری کمیشن تشکیل دیا جا سکے۔

ان کا کہنا تھا کہ پاکستان گزشتہ روز اسرائیلی فورسز کی جانب سے معصوم اور غیرمسلح فلسطینی باشندوں کے قتل عام کی سختی سے مذمت کرتا ہے جو وہاں اشیائے خوردونوش اور جان بچانے والی دواؤں کے انتظار میں کھڑے تھے۔

ممتاز زہرہ بلوچ نے مزید کہا کہ پاکستان، بھارت کے مسلم کانفرنس جموں و کشمیر کے دھڑوں پر پابندی عائد کرنے کے فیصلے کو مسترد کرتا ہے اور بھارت سے مطالبہ کیا کہ وہ 8 کشمیری جماعتوَں پر عائد پابندیاں اٹھائے۔

ایک سوال کے جواب میں انہوں نے کہا کہ پاکستان تحریک انصاف کی جانب سے انٹرنیشنل مانیٹری فنڈ کو لکھے گئے خط کو وزیر اعظم آفس دیکھ رہا ہے۔

ان کا کہنا تھا کہ پاک ایران گیس پائپ لائن منصوبے سے کے حوالے سے وفاقی کابینہ کی توانائی کمیٹی فیصلہ کرچکی ہے، توانائی کا حصول پاکستان کی اولین ترجیح ہے اور پاکستان اس منصوبے کی اہمیت کو بخوبی سمجھتا ہے۔

انہوں نے کہا کہ کمیٹی نے پہلے مرحلے میں پاکستان میں 80 کلومیٹر پائپ لائن کی تعمیر کی منظوری دی ہے اور تاحال اس منصوبے میں کسی تیسرے ملک یا فریق کی شمولیت کا علم نہیں ہے۔

By Admin

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *