وفاقی دارالحکومت اسلام آباد کے سیکٹر جی سکس میں ایک افغان شہری اور صحافی احمد حنائیش پر مبینہ طور پر موبائل چھینے کی کوشش کے دوران ہونے والے تشدد کے واقعے کا مقدمہ درج کر لیا گیا ہے۔

اس ضمن میں درج کی گئی ایف آئی آر کے مطابق، احمد حنائیش اپنے ساتھی محسن طاہری کے ساتھ رات گیارہ بجے آبپارہ مارکیٹ سے جِم کی طرف جا رہے تھے جب ایک موٹرسائیکل پر سوار تین افراد ان پر حملہ آور ہوئے اور اُن سے فون اور لیپ ٹاپ چھیننے کی کوشش کی۔

مقدمے کے مدعی احمد نے اپنے بیان میں کہا کہ ’ایک حملہ آور ان کے دوست سے فون چھیننے لگا جبکہ دوسرے نے ان سے موبائل فون اور بیگ چھیننے کی کوشش کی اور اس دوران ہونے والی مزاحمت پر حملہ آوروں کی جانب سے دو فائر کیے گئے۔ ایک گولی صحافی احمد کے بائیں پاؤں پر لگی جبکہ اس دوران ان کی کنپٹی پر پستول کا بٹ مارا گیا جس سے وہ زمین پر گِر پڑے۔‘

اس واقعے کے بعد احمد کو پہلے ایمرجنسی میں پِمز ہسپتال لے جایا گیا جس کے بعد انھیں اب پرائیوٹ ہسپتال منتقل کر دیا گیا ہے۔ احمد ’ریڈیو آزادی‘، ’ریڈیو دنیا‘ اور ’کہکشاں ریڈیو، سے منسلک ہیں جبکہ وہ پاک افغان جرنلسٹ یونینکے رکن بھی ہیں۔

اسلام آباد پولیس نے اپنے ایک بیان میں کہا ہے کہ ملزمان کا سیف سٹی کیمرہ کے ذریعے پتا لگا کر انھیں سزا دی جائے گی

By Admin

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *