ناروے نے غیرملکیوں کے لیے صرف تین سال میں مستقل رہائش حاصل کرنا آسان بنا دیا۔ نیوز ویب سائٹ’پروپاکستانی‘ کے مطابق ناروے کی مستقل شہریت حاصل کرنے کے لیے مالی معاونت کی شرط تھی جو اب ناروے حکومت کی طرف سے ختم کر دی گئی ہے۔
سابق قانون کے تحت 18سے 67سال کی عمر کے افراد کو مستقل رہائشی اجازت نامے کے حصول کے لیے پچھلے سال کے دوران مستحکم آمدنی ظاہر کرنے اور حکومتی مالی امداد حاصل کرنے سے گریز کرنے کی ضرورت تھی، تاہم نئے قانون میں سوشل سروسز ایکٹ کے تحت مالی امداد حاصل کرنے پر عائد پابندی ختم کر دی گئی ہے۔ تاہم مستحکم آمدنی کی شرط نئے قانون میں بھی برقرار رکھی گئی ہے۔
رپورٹ کے مطابق مستقل رہائش کا اجازت نامہ رکھنے والے لوگ ناروے میں غیرمعینہ مدت تک قیام کر سکتے ہیں اور کام بھی کر سکتے ہیں۔ مستقل رہائش کے اجازت نامے کے لیے درخواست دینے والوں کے پاس ناروے میں کم از کم تین سال کے لیے ایک درست رہائشی اجازت نامہ ہونا چاہیے اور اہلیت کے اضافی معیارات پر پورا اترنا چاہیے

By Admin

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *