محکمۂ انسداد دہشت گردی (سی ٹی ڈی) نے کہا ہے کہ بشام میں چینی انجینیئرز کے قافلے پر حملے میں تحریک طالبان پاکستان (ٹی ٹی پی) ملوث ہے اور اس کے خلاف مشترکہ کارروائیوں کے دوران چار ملزمان گرفتار کیے گئے ہیں۔

26 مارچ کو بشام میں داسو منصوبے کے قریب اس حملے میں پانچ چینی شہری اور ایک پاکستانی ڈرائیور کی ہلاکت ہوئی تھی۔ تاحال کسی گروہ نے اس حملے کی ذمہ داری قبول نہیں کی ہے۔

ترجمان سی ٹی ڈی کا کہنا ہے کہ جوائنٹ انویسٹیگیشن ٹیم نے قانون نافذ کرنے والے اداروں کی مدد سے دہشتگردوں کے نیٹ ورک کو بے نقاب کیا ہے۔

اس کا کہنا ہے کہ حملے میں ملوث نیٹ ورک کے ’اہم کرداروں کا تعین کر لیا گیا ہے۔ چار ملزمان کی گرفتاری عمل میں آئی ہے۔‘

’پورے نیٹ ورک کو پکڑنے کی کوششیں جاری ہیں۔‘

اس کے مطابق ضلع مانسہرہ سے تعلق رکھنے والے ٹی ٹی پی کے ایک سہولت کار نے اعتراف کیا ہے کہ اس نے حملے میں مرکزی کردار ادا کیا۔

خیال رہے کہ چینی انجینیئر اسلام آباد سے داسو منصوبے کی طرف جا رہے تھے جب بشام میں ان کی وین پر حملہ ہوا اور یہ گہری کھائی میں جا گری

By Admin

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *