کچھ بھی یادگار نہیں رہتا،سارا رعب دبدبہ، دولت، شہرت اور عہدوں کا نشہ ایک دن سب خاک ہو جائیگا، سب ٹھاٹھ پڑا رہ جائیگا۔پاکستانی ججوں، جرنیلوں، سیاستدانوں، دانشوروں، کاروباری افراد اور بیوروکریٹس سے درخواست ہے کہ زندگی کا سبق زندگی کی شمع سے حاصل کریں۔ سینئر تجزیہ کار و کالم نگار  مظہر برلاس نے “جنگ ” میں شائع ہونیوالے اپنے کالم میں لکھا ہے کہ پاکستانی ججوں، جرنیلوں، سیاستدانوں، دانشوروں، کاروباری افراد اور بیوروکریٹس سے درخواست ہے کہ زندگی کا سبق زندگی کی شمع سے حاصل کریں۔ بڑے بڑے عہدے، عہدوں کی اکڑ، سارا رعب دبدبہ، دولت، شہرت اور عہدوں کا نشہ ایک دن سب خاک ہو جائیگا، سب ٹھاٹھ پڑا رہ جائیگا۔ زندگی سے اس وقت سبق حاصل کریں جب آپ کے پاس طاقتور عہدے ہوں، دولت کی ریل پیل ہو اور دبدبے کی ساری ہوائیں آپ کیساتھ چلتی ہوں۔ کچھ بھی یادگار نہیں رہتا، راہ راست پر بیتے لمحے سفر کو یادگار بنا دیتے ہیں، یہی راہ نجات ہے، ایاک نعبد و ایاک نستعین۔ جمعے اور ہفتے کی درمیانی شب اسلام آباد کے ایک بڑے ہوٹل میں محفل سماع تھی، کچھ نوجوانوں کی احساسات کو چھو لینے والی گفتگو اور اسکے بعد زمرد خان کی وہ باتیں جو دلوں کی دھرتیوں کو آباد کرتی ہیں، سیراب کرتی ہیں اور شاداب بنا دیتی ہیں۔  یہ تقریب سویٹ ہوم کیلئے فنڈز اکٹھا کرنے کیلئے منعقد کی گئی تھی، تقریب میں تلاوت کرنیوالا اور نعت رسول مقبول پڑھنے والا بچہ سویٹ ہوم کا تھا، اسکے بعد کئی نوجوانوں نے اپنا تعارف مستقبل کی پیش بندیوں کیساتھ بیان کیا۔

By Admin

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *