اسرائیل کی فوج نے کہا ہے کہ انھوں نے ایران کی جانب سے اسرائیل پر داغے گئے ’بیشتر‘ میزائلوں اور خودکش ڈرونز کو مار گِرایا ہے۔

اسرائیلی فوج کی جانب سے جاری کردہ تازہ ترین بیان میں کہا گیا ہے کہ اسرائیل کی حدود میں پہنچنے سے قبل ہی بیشتر ایرانی میزائلوں اور ڈرونز کو ’ایرو‘ نامی فضائی دفاعی نظام اور خطے میں موجود سٹریٹیجک اتحادیوں کی مدد سے ناکام بنا دیا گیا ہے۔

اسرائیلی فوج کے ترجمان نے کہا ہے کہ ایران کی جانب سے کیے گئے حملے میں فی الحال ایک بچی کے زخمی ہونے کی اطلاعات ہیں۔ انھوں نے یہ بھی کہا کہ اس حملے کے نتیجے میں اسرائیل میں واقع ایک عسکری تنصیب کو معمولی نقصان پہنچا ہے۔ تاہم اسرائیل کی جانب سے مزید تفصیلات فراہم نہیں کی گئی ہیں۔

یاد رہے کہ سنیچر کو رات گئے ایران کی جانب سے کی گئی ایک ’جوابی کارروائی‘ میں درجنوں میزائل اور خودکش ڈرونز اسرائیل کی جانب داغے گئے تھے۔ یہ پیش رفت ایک ایسے وقت میں سامنے آئی تھی جب گذشتہ کئی دنوں سے ایران کی جانب سے اسرائیل کے خلاف جوابی کارروائی کا تذکرہ ہو رہا تھا۔

یاد رہے کہ رواں ماہ کے آغاز میں ہونے والے ایک میزائل حملے کے نتیجے میں شام کے دارالحکومت دمشق میں واقع ایرانی سفارتخانے کو نشانہ بنایا گیا تھا جس میں متعدد پاسداران انقلاب کے افسران ہلاک ہوئے تھے۔ ان میں خطے میں قدس فورس کے سب سے اعلی عہدیدار بریگیڈیئر جنرل محمد رضا زاہدی بھی شامل تھے۔ اس حملے کے بعد ایران نے جوابی کارروائی کا اعلان کیا تھا

By Admin

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *